Small Deeds of Love and Kindness Makes A Huge Righteousness (Urdu)

0
382
Small Deeds of Love and Kindness Makes A Huge Righteousness

Small Deeds of Love and Kindness Makes A Huge Righteousness

بابا رفیق اکثر ہی اپنی عصا سے آب نکاسی کی نالیوں کو صاف کرتے تو سب انہیں تحقیرانہ نظروں سے تکتے تھے جبکہ انہیں اس کام کیلئے کوئی پیسے نہیں ملتے تھے۔ مجھے حیرت ہوتی تھی کہ وہ کیوں ایسا کرتے ہیں۔

کئی بار ان سے پوچھا تو بس یہ کہہ دیتے کہ بیٹا یہ چھوٹی سے نیکی ہے۔

اور مجھے ایسا کرنا ہرگز برا نہیں لگتا۔ بس لوگوں کیلئے آسانیاں پیدا کرنے کی کوشش کرتا ہوں۔

مجھے یہ سمجھ نا آیا کہ اتنی معمولی سی بات سے لوگوں کیلئے کیا آسانی آسکتی ہے

جبکہ لوگ ان کے اس عمل کو پسند بھی نہیں کرتے۔

دن گزرتے گئے اور ایک دن بابا رفیق اس دار فانی سے کوچ کرگئے۔ 

انکی وفات سے ٹھیک تین دن بعد پوری گلی میں پانی ہی پانی جمع ہوگیا۔

کیونکہ نالیوں کی صفائی نا ہونے پر اس میں کچرہ جمع ہوگیا جسکی وجہ سے پانی ابل ابل کر باہر آنے لگا۔

وہ لوگ جو بابا پر برے الفاظ کستے تھے آج اس گندگی میں گرتے پھر رہے تھے۔ 

نمازی نماز کیلئے بڑی مشکل سے کپڑے بچا کر نکلتے، خواتین اور بچوں کا نکلنا دو بھر ہوگیا۔

اس دن سمجھ آیا کہ انکے چھوٹے سے عمل سے کتنے لوگوں کیلئے آسانیاں پیدا ہوتی تھیں۔ 

اس دن یہ بات بھی عیاں ہوئی کہ جن لوگوں کو ہم اپنی زندگی میں غیر اہم سمجھتے ہیں درحقیقت وہ بالواسطہ طور پر ہمارے لئے بلکہ پورے معاشرے کیلئے انتہائی اہم اقدامات کر رہے ہوتے ہیں

لیکن ہمیں سمجھ تب آتی ہے جب وہ اپنے کام کرنے چھوڑ دیتے ہیں۔

چھوٹے چھوٹے اعمال جو ہمارے لئے غیر اہم ہیں وہ معاشرے میں بڑی تبدیلیاں برپا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔۔

Please Follow and Like us:
0

Leave a Reply From Your Facebook, Twitter or Google/Gmail Account: